Home / پاکستان / جوبائیڈن کے صدر بنتے ہی پاک فوج کو امریکا کی جانب سے شاندار پیغام مل گیا

جوبائیڈن کے صدر بنتے ہی پاک فوج کو امریکا کی جانب سے شاندار پیغام مل گیا

Sharing is caring!

جوبائیڈن کے امریکہ کا صدر بنتے ہی پاک فوج کے لیے بڑی خوشخبری آ گئی ہے۔ ڈان ڈاٹ کام کے مطابق صدر جوبائیڈن کے نامزد دفاعی سربراہ جنرل لائیڈ جے آسٹن نے پاکستان کے ساتھ فوجی تعلقات کی تجدید کا عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ”جوبائیڈن انتظامیہ پاکستان کو افغان امن عمل میںایک ضروری ساتھی کے طور پر

دیکھتی ہے۔ میں افغان امن عمل کو بگاڑنے والے علاقائی عناصر کو روکتے ہوئے ایک علاقائی اپروج کی حوصلہ افزائی کروں گا جو پاکستان جیسے پڑوسی ممالک سے حمایت حاصل کرے۔“ان کا کہنا تھا کہ ”پاکستان افغانستان میں ہونے والے کسی بھی تصفیے میں اہم کردار ادا کرے گا۔“جنرل لائیڈ آسٹن سے سوال کیا گیا کہ وہ بحیثیت سیکرٹری دفاع امریکہ کے پاکستان کے ساتھ تعلقات میں کیا

تبدیلیاں تجویز کریں گے تو ان کا کہنا تھا کہ ”میں دونوں ملکوں کے مشترکہ مفادات پر توجہ دوں گا جس میں بین الاقوامی فوجی تعلیم و تربیت اور فنڈز کا استعمال کرتے ہوئے پاکستان کے مستقبل کے فوجی رہنماؤں کی تربیت بھی شامل ہوگی۔“ پاکستان کیساتھ تعاون بڑھانے کا عندیہ، جوبائیڈن نے صدر بنتے ہی خوشخبری سنا دی امریکا کے نامزد وزیر دفاع جنرل لوئیڈ آسٹن نے پاکستان کو افغان عمل کے لیے ناگزیر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ خطے کا امن خراب کرنے والے کرداروں کو قابو میں رکھا جائے گا۔امریکی میڈیا سے مستقبل کی دفاعی پالیسی پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اگر بطور وزیر دفاع میری توثیق ہوجاتی ہے تو میں پاکستان کا تعاون حاصل کرنے کی بھرپور کوشش کروں گا۔ انہوں نے خطے میں بھارت کے کردار کی

جانب اشاراتاً تبصرہ کرتے ہوے کہا کہ افغان عمل میں بگاڑ کی کوششیں کرنے والے کرداروں کو روکنے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں گے۔جنرل آسٹن کا کہنا تھا کہ افغانستان میں مستقبل کے کسی بھی سیاسی بندوبست میں پاکستان کا کردار انتہائی اہم ہوگا۔ میں سمجھتا ہوں کہ امریکی درخواست پر پاکستان نے افغان امن عمل کے لیے تعمیری کردار ادا کیا ہے۔ پاکستان نے اس کے ساتھ ساتھ لشکر طیبہ اور جیش محمد جیسی تنظیموں کے خلاف اقدامات کیے ہیں، اگرچہ اس سلسلے میں مزید پیش رفت ہونا ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی دفاعی امداد معطل کرنے سے باہمی تعاون متاثر ہوسکتا ہے جس میں افغان مذاکرات سے لے کر پلوامہ حملوں کے بعد پیدا ہونے والی خطرناک صورت حال بھی شامل ہے۔نامزد وزیر دفاع اور امریکی سینٹرل

کمانڈ کےسابق کمانڈر جنرل لوئیڈ آسٹن نے دونوں ممالک کے مابین دفاعی تعلقات میں اضافے کا عندیہ بھی دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو طرفہ تعاون میں اضافے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے جن میں انٹرنیشنل ملٹری ایجوکیشن فنڈ(آئی ایم ای ٹی) کے تحت پاکستان کے اعلیٰ عسکری افسران کی تربیت کے پروگرام بھی شامل ہوں گے۔واضح رہے کہ

صدر ٹرمپ نے اگست 2018 میں آئی ایم ای ٹی کے پروگرامز میں پاکستان کی شرکت پر پابندی عائد کردی تھی۔ بعدازاں 2019 میں یہ سہولت دوبارہ بحال کردی گئی تھی۔ آئی ایم ای ٹی کے تحت غیر ملکی افواج کے افسران کو امریکا کے عسکری تعلیمی و تربیتی اداروں میں مواقع فراہم کیے جاتے ہیں۔اس کے ساتھ ہی نامزد وزیر دفاع نے کہا کہ وہ مسلح گروہوں یا دیگر شدت پسندوں کو اپنی سرزمین استعمالکرنے سے روکنے کے لیے پاکستان پر زور دیں گے۔ اس کے ساتھ ہی دونوں ممالک کے افواج کے مابین کلیدی امور پر تعاون کے لیے نئی ابتدا کی جائے گی۔نومنتخب امریکی صدر جوبائیڈن نے 7 دسمبر 2020 کو جنرل ریٹائرڈ لوئیڈ آسٹن کو سیکریٹری دفاع نام زد کیا ہے۔ اس سے قبل جنرل آسٹن صدر اوباما کے دور میں وہ مشرق وسطی میں امریکی فوج کے کمانڈر رہے۔

About admin

Check Also

15+ Images Explain How To Change Old Tires Into Stunning Works Of Art

Perhaps you would like to try your hand at creating one of these sculptures if …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *