Home / سیاست / ’’ کمزور ہوں ،میرا ایک ہی بیٹا ہے، اس لیے اسٹیبلشمنٹ سے ۔۔۔‘‘ آصف زرداری پی ڈیم ایم کے اجلاس میں کیا کہتے رہے؟ تہلکہ خیز انکشاف

’’ کمزور ہوں ،میرا ایک ہی بیٹا ہے، اس لیے اسٹیبلشمنٹ سے ۔۔۔‘‘ آصف زرداری پی ڈیم ایم کے اجلاس میں کیا کہتے رہے؟ تہلکہ خیز انکشاف

Sharing is caring!

پاکستان مسلم لیگ(ن) پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ(پی ڈی ایم) کے اجلاس میں آصف علی زرداری نے کہا کہ میں کمزور ہوں، میرا ایک ہی بیٹا ہے میں لڑ نہیں سکتا، انکی اس بات کی ریکارڈنگ بھی موجود ہے۔ جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم اجلاس کے دوران کچھ باتیں کرنے کے بعد آصف علی زرداری نے پینترا بھی

بدلا اور مریم نواز سے معافی بھی مانگی۔ پی ڈی ایم میں طے ہوا تھا کہ سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر مسلم لیگ ن سے ہوگا۔پی ڈی ایم کی نو جماعتیں ایک طرف اور پیپلز پارٹی ایک طرف ہے۔ پی ڈی ایم اجلاس کی خبریں باہر آنے سے پی ڈی ایم کو نقصان ہوا ہے۔ اجلاس میں سات مسترد ووٹوں پر لے دے ہوئی ہے کہ یہ کس نے کیا اور کیوں کیا؟ اگر سینیٹ چیئرمین پیپلز پارٹی کا بن جاتا تو یہ حکومت

کے لیے بڑا دھچکا ہوتا۔پی ڈی ایم الیکشن اتحاد نہیں ہے دوسری جانب پیپلزپارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ آصف علی زرداری نے میرا ایک ہی بیٹا ہے لڑنہیں سکتا والی بات کی تھی مگر اس بات کو کسی اور حوالے سے کہا گیا تھا۔ یہ بات اشارے کے طور پر کی گئی تھی۔زرداری صاحب نے جو باتیں کیں وہ نواز شریف کی باتوں کے جواب میں تھیں۔ جیو نیوز کے پروگرام میں بات کرتے

ہوئے انکا کہنا تھا کہ زرداری صاحب سے 13 سے 14 سال جیلیں کاٹیں وہ جیلوں سے نہیں ڈرتے۔ہماری اپنے اداروں سے کوئی لڑائی نہیں ہے،ہم اداروں کو آئینی حدود میں لے جانے کی باتیں کررہے ہیں۔اگر دوبارہ الیکشن اسی الیکشن کمیشن اور انہیں قوانین کے مطابق ہونگے تو اسکا کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔

مریم نے جوبات کی اور بلاول نے جو بات کی اس کو ساری قوم جانتی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ یوسف رضا گیلانی کا الیکشن چھینا گیا ہے۔سینیٹ الیکشن ایک مشترکہ جدوجہد تھی۔ ہم اکیلے ہی کافی ہیں یہ بات ٹھیک نہیں ہے۔ہمارے اختلاف سے حکومت کو فائدہ ہوا ہے۔

About dnewswala

Check Also

Top 25+ Creative Bamboo Fence Ideas

The fence of the house in addition to functioning as a protector of the house …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *